گائڈ

سنگھار میز کے سامنے کھڑی وہ اپنے بالوں میں برش پھیر رہی تھی۔ اس نے بالوں کو اونچا اٹھا کہ انھیں ربڑ بینڈ میں مقید کر دیا۔ بال ایسے کہ گویا رپشم کی لڑیاں ہوں ۔ سیدھے لمبے اور بھاری بال اسکی کمر تک آ رہے تھے۔